دنیا کا ایسا شہر جہاں راتوں رات ہزاروں افراد پتھر کے بن گئے

03-27-2021

دنیا کا ایسا شہر جہاں راتوں رات ہزاروں افراد پتھر کے بن گئے

  پومپی

اٹلی کا شہر  پومپی وہ شہر ہے جہاں ہزاروں افراد راتوں رات پتھر کے بن گئے- اس شہر کی آبادی بیس ہزار افراد پر مشتمل تھی- اپنے دور میں یہ دنیا کا انتہائی جدید ترین شہر تھا. اس شہر کی امارات پختہ اینٹوں کی حامل تھی- جب اس شہر کو دریافت کیا گیا تو لوگوں کو وہاں پر ایسا اسٹیڈیم بھی ملا جس میں بیس ہزار افراد ایک وقت میں بیٹھ سکتے تھے- ان شہر میں جوا اور زنا اور شراب جیسی غلاظتیں عام تھی- لیکن پھر قدرت جوش میں آئ  اور ان پرعذاب نازل ہوا-  پومپی شہر کے قریب واقعی آتش فشاں پہاڑ پر پڑا  اور لاوا ابلنے لگا- اس نے پورے شہر کو اپنی لپیٹ میں لے لیا - پورا شہر ہی انسانوں کا قبرستان بن گیا- یہ علاقہ سولہ سو سال تک انسانی آنکھوں سے اوجھل رہا - سترہ سو ااڑھتلیس میں اسارے قدیمہ کے ماہرین سے اس شہر کو دریافت کیا جو کے راک اور مٹی کے ڈھیر تلے دبا ہوا تھا- دریافت ہونے والی امارت بلکل محفوظ حالت میں موجود تھی- دریافت کرنے والے ماہرین کو عجیب مناظر دیکھنے کو ملے - انہیں راک اور مٹی کے نیچے دبے انسانوں کی لاشیں ملی جو کے پتھر کی بنی ہوئے تھی- یہ انسان جس حالت میں تھے اسی حالت میں موت کا شکار بن گئے- یہاں تک کے کی لاشوں کے پاسس ماہرین کو کچھ روٹی کے ٹکڑے اور دیگر سامان بھی ملا-جن پر راک کی اک موتی تہ چڑھ چکی تھی- ماہرین کا کہنا تھا کہ یہ شہر آٹھ سو قبل مسیح میں آباد کیا گیا تھا- اس شہر میں خوبصورت بنگلے بھی تعمیر کے گئے تھے جبکے گلیاں بھی پختہ بنائی گئی تھی- اس شہر کی باقیات میں اجھڑے مقانات اور انسانی ڈھانچے آج بھی موجود ہیں-

Source link

Latest Posts

Comments
You must be logged in to post a comment.